urduadab urduadab

3,650 posts   358,705 followers   35 followings

urdu adab اردو ادب  اُردو کی محبت،خلوص اور اپنائیت بھری دنیا میں آپ کا دل کی گہرائیوں سے خوش آمدید 💚 ❤ 😊 . . . میں قصہ مختصر نہیں تها ورق کوجلدی پلٹ گئے ہو تم!! #urduadab

💚💛💜❤
کب یاروں کو تسلیم نہیں
کب کوئی عُدو اِنکاری ھے
اِس کُوئے طلب میں ھم نے
دِل نذر کیا ، جاں واری ھے

جب سازِ سلاسل بجتے تھے
ھم اپنے لہُو سے سجتے تھے
وہ رَسم ابھی تک باقی ھے
یہ رَسم ابھی تک جاری ھے

کچھ اھلِ ستم کچھ اھلِ چَشم
مئے خانہ گرانے آئے تھے
دھلیز کو چُوم کے چھوڑ گئے
دیکھا کہ یہ پتھر بھاری ھے

جب پرچمِ جاں لے کر نکلے
ھم خاک نشیں مقتل مقتل
اُس وقت سے لے کر آج تلک
جلاد پہ ھیبت طاری ھے

زَخموں سے بدن گلزار سہی
پر اُن کے شکستہ تیر گنو
خود ترکش والے کہہ دیں گے
یہ بازی کس نے ھاری ھے ؟؟
.
ھم سہل انگار سہی لیکن
کیوں اھلِ ھَوس یہ بُھول گئے
یہ خاکِ وطن ھے جان اپنی
اور جان تو سب کو پیاری ھے

احمّد فراز
.
.
#PAF #23rdMarchPARADE #PakFaziaZindabad #PakistanDay #PakistanZindabad

آنکھوں میں ستارے تو ، کئی شام سے اُترے
پر دل کی اُداسی نہ ، در و بام سے اُترے
اوروں کے قصیدے ، فقط آورد تھے جاناں
جو تُجھ پہ کہے شعر ، وہ اِلہام سے اُترے

احمّد فراز

عذاب یہ بھی ، کسی اور پر نہیں آیا
کہ ایک عمر چلے ، اور گھر نہیں آیا

عجیب ھی تھا ، میرے دورِ گمرھی کا رفیق
بچھڑ گیا تو، کبھی لوٹ کر نہیں آیا

حریمِ لفظ و معانی سے ، نسبتیں بھی رھیں
مگر سلیقۂ عرضِ ھنر نہیں آیا

کریں تو کس سے کریں ، نا رسائیوں کا گلہ ؟؟
سفر تمام ھُوا ، ھمسفر نہیں آیا

اُس ایک خواب کی حسرت میں ، جَل بجھیں آنکھیں
وہ ایک خواب ، کہ اب تک نظر نہیں آیا

افتخار عارف

کوئی اتنا پیارا ، کیسے ھو سکتا ھے ؟
پھر سارے کا سارا ، کیسے ھو سکتا ھے ؟

تُجھ سے جب مل کر بھی ، اُداسی کم نہیں ھوتی
تیرے بغیر گزارا ، کیسے ھو سکتا ھے؟

کیسے کسی کی یاد ، ھمیں زندہ رکھتی ھے؟
ایک خیال سہارا ، کیسے ھو سکتا ھے؟

یار ! ھَوا سے کیسے آگ بَھڑک اُٹھتی ھے؟
لفظ کوئی انگارا ، کیسے ھو سکتا ھے ؟

کون زمانے بھر کی ٹھوکریں کھا کر ، خوش ھے؟
درد کسی کو پیارا ، کیسے ھو سکتا ھے؟

ہم بھی کیسے ایک ھی شخص کے ھو کے رہ جائیں
وہ بھی صرف ھمارا ، کیسے ھو سکتاھے؟

کیسے ھو سکتا ھے , جو کچھ بھی میں چاھُوں؟
بول نہ میرے یارا ، کیسے ھو سکتا ھے؟

جواّد شیخ

ایسا ہے کہ سب خواب مسلسل نہیں ہوتے
جو آج تو ہوتے ہیں مگر کل نہیں ہوتے

اندر کی فضاؤں کے کرشمے بھی عجب ہیں
مینہ ٹوٹ کے برسے بھی تو بادل نہیں ہوتے

کچھ مشکلیں ایسی ہیں کہ آساں نہیں ہوتیں
کچھ ایسے معمے ہیں کبھی حل نہیں ہوتے

شائستگیٔ غم کے سبب آنکھوں کے صحرا
نمناک تو ہو جاتے ہیں جل تھل نہیں ہوتے

کیسے ہی تلاطم ہوں مگر قلزم جاں میں
کچھ یاد جزیرے ہیں کہ اوجھل نہیں ہوتے

عشاق کے مانند کئی اہل ہوس بھی
پاگل تو نظر آتے ہیں پاگل نہیں ہوتے

سب خواہشیں پوری ہوں فرازؔ ایسا نہیں ہے
جیسے کئی اشعار مکمل نہیں ہوتے

احمد فراز

.
ھے دُعا یاد ، مگر حرفِ دعا یاد نہیں
میرے نغمات کو ، اندازِ نَوا یاد نہیں

میں نے پَلکوں سے ، درِ یار پہ دستک دی ھے
میں وہ سائل ھُوں ، جسے کوئی صدا یاد نہیں

ھم نے جن کے لیے ، راھوں میں بچھایا تھا لہُو
ھم سے کہتے ھیں وھی ، عہدِ وفا یاد نہیں

کیسے بَھر آئیں ، سرِ شام کسی کی آنکھیں ؟؟
کیسے تَھرائی چراغوں کی ضیا ، یاد نہیں

صرف دُھندلائے ستاروں کی ، چمک دیکھی ھے
کب ھُوا ، کون ھُوا ، کس سے خفا ، یاد نہیں

زندگی جبرِ مسلسل کی طرح کاٹی ھے
جانے کس جرم کی پائی ھے سزا ، یاد نہیں

آؤ , ایک سجدہ کریں ، عالمِ مدھوشی میں
لوگ کہتے ھیں ، کہ ساغر کو خدا یاد نہیں

ساغر صدیقی

رونق ، میلے ، گلاں باتاں ، دَرشن شام سَویرے
یاراں نال فرید بہاراں ، تے یاراں باھجھ ھنیرے

بابا غلام فرید

Most Popular Instagram Hashtags